fbpx
GCHF
Gatwala Commercial Hub , Faisalabad is Punjab’s biggest and Pakistan’s second largest mixed use, real estate project. It has a covered area of over 3.1 million sq. ft.

This mega project, designed and developed by Shah Nawaz Associates, is located, at the junction of Canal Expressway and Lahore Sheikhupura Road. The road in front of the GCH project, has an average traffic count of 30 vehicles per minute. become, the city’s next mega center for trade, commerce, industries as well as residential projects.

 

Blog

اسلام آباد کے مشہور سیاحتی مقامات

اسلام آباد، مارگلہ کے دامن میں واقع ایک ایسا شہر ہے کہ جس کی نظیر پورے پاکستان میں اور کہیں نہیں ملتی۔ یہ بات تو طے ہے کہ یہ شہر خوبصورت ہے۔ اسے خوبصورت اس کی کشادگی بناتی ہے۔ اسے حسین اس کی شادابی بناتی ہے۔ اس کی پر نور صبحیں اور خنک شامیں، مارگلہ کی اونچایوں سے آتی تازہ ہوا، شیشے کی پرتعیش دکانیں اور ان دکانوں کے اندر جھانکتے خوبصورت لوگ۔ کسی نے کیا خوب کہا ہے کہ اسلام آباد جیسے شہر بستے بستے، بستے ہیں یعنی بسانے سے نہیں بستے بس، بس جاتے ہیں۔

یہ پاکستان کا واحد شہر ہے جو ایک پلان کے تحت بنا، یہ شہر پورے پاکستان کو اپنے دل میں سموتا ہے۔ یہاں اقتدار کے تمام ایوان ہیں یعنی ملک کو چلایا کیسے جائے وہ تمام فیصلے یہاں ہوتے ہیں۔ یہاں کے باسی ہی بتا سکتے ہیں کہ یہ شہر سکون اور خاموشی کا ایک مجسم ہے۔ یہاں کے سکون میں مگر راز ہیں، یہاں کی ہوا میں اپنایت، زندگی اور زندہ دلی کا نشہ ہے اور یہاں جو ایک بار اپنا دل لگا لے وہ پھر کہیں اور نہیں رہ سکتا۔

اس آرٹیکل میں آپ کو ہم بتائیں گے کہ آپ خوبصورتی کے پیکر اس شہر اسلام آباد میں سیر و تفریح کی غرض سے کن کن جگہوں پر جا سکتے ہیں یا وہ کون کون سی جگہیں ہیں جہاں اگر آپ اگر ایک بار چلے جائیں تو آپ رہتی زندگی فخر سے کہہ سکتے ہیں کہ آپ اسلام آباد گھوم اور دیکھ چُکے ہیں۔

اسلام آباد کے ساتھ تاریخ اور ثقافت زندہ ہے۔ دارالحکومت کے قیام سے قبل بھی یہ شہر اپنی پوری آب و تاب کے ساتھ زندہ تھا اور چونکہ یہاں سے بدھ مت کی بہت سی باقیات دریافت ہوئ ہیں لہٰذا یہ کہا جا سکتا ہے آج سے پہلے بسنے والی دنیا کے ساتھ بھی یہ شہر اہم لوگوں اور فیصلوں کا مرکزو محور تھا۔ نیز سید پور کی پرانی بستی مارگلہ کے دامن میں ہی موجود ہے جو ماضی میں ہندو آباد علاقہ تھا۔ 1960 میں دارالحکومت کو کراچی سے اسلام آباد منتقل کیا گیا۔

لوک ورثا

اسلام آباد کو جینے کے لئے یہ ایک بہترین مقام ہے۔ شکر پڑیاں روڈ کے قریب لوک ورثا میوزیم ہے۔ میوزیم پاکستان کی تاریخ اور ثقافت کا ایک مظہر ہے۔ میوزیم پاکستان کی زندہ ثقافتوں اور روایات کو خراج تحسین پیش کرتا ہے۔ میوزیم نے 1974 میں لوگوں کے لئے اپنے دروازے کھولے۔ یہ میوزیم متعدد عمارتوں اور بیرونی حصوں پر مشتمل ہے۔

پاکستان کا ثقافتی ورثہ متعدد ثقافتی اشیاء کو ظاہر کرتا ہے جن حصوں میں پاکستان کے مختلف نسلی گروہوں کے مجسمے، تصاویر، مٹی کے برتن، موسیقی اور ٹیکسٹائل کا کام شامل ہے۔ اس میں وسائل کی لائبریری بھی ہے جس میں لوک داستانیں ، ثقافت ، روایات ، نسلوں اور تاریخ کے بارے میں کتابوں کا ایک بہت بڑا ذخیرہ ہے۔ میوزیم میں باقاعدہ نمائشیں بھی منعقد کی گئیں جن میں کڑھائی والے ملبوسات ، زیورات ، لکڑی اور دھات کا کام ، بلاک پرنٹنگ ، ہاتھی کے دانت اور ہڈیوں کے کاموں کی نمائش کی گئی ہے۔

سید پور

یہ جگہ اسلام آباد میں سیر اور تفریح کے لئے ایک اعلی مقام ہے۔ سید پور ایک قدیم گاؤں ہے جس کی ایک متمول تاریخ ہے اور یہ مارگلہ پہاڑی، اسلام آباد کے قریب واقع ہے۔ ماضی میں یہ ایک ہندو گاؤں رہا ہے جہاں دور دراز کے علاقوں سے ہندو اپنے مذہبی رسومات کی ادایگی کے لئے آتے تھے۔ گاؤں کی باقیات آج بھی موجود ہیں جہاں سیاح باقاعدگی سے آتے ہیں۔

حکومت نے یہ کہا اب گاؤں کو جدید بنادیا ہے اور متعدد پوش ریستوراں اور دکانوں کے ساتھ اسے جدید گاؤں میں تبدیل کردیا ہے۔ اگر آپ موسیقی ، ثقافت اور اچھے نظاروں سے دن سے گزارنا چاہتے ہیں تو سید پور گاؤں ، اسلام آباد ہی آپ کے رکنے کا مقام ہے۔ نیز ، اگر آپ رات کے وقت اسلام آباد میں دیکھنے کے لئے جگہیں تلاش کر رہے ہیں تو اس جگہ پر غور کریں۔

شاہ اللہ دتہ غار
دلچسپ بات یہ ہے کہ اسلام آباد میں دیکھنے کے لئے بہت سارے مقامات ہیں اور شاہ اللہ دتہ غار ان میں سے ایک ہیں۔ اسلام آباد میں دیکھنے کے لئے یہ ایک بہترین مقام ہے۔ شاہ اللہ دتہ گفا ، جو مارگلہ کے دامن میں واقع ایک تاریخی مقام ہے ، کو یاد نہیں کرنا چاہئے۔ غاروں کے قریب واقع یہ گاؤں 700 سال پرانا بتایا جاتا ہے جو کابل اور گندھاران شہر کو ملانے والے راستے کے طور پر کام کرتا تھا۔ جہاں تک غاروں کا تعلق ہے تو ، مورخین کا دعویٰ ہے کہ ان غاروں کی عمر 2400 سال سے بھی زیادہ پرانی ہے۔ یہ غار بدھ مت کے دور ، اورنگ زیب دور اور ہندو عہد کی آثار ہیں۔ اگر آپ اسلام آباد میں غروب آفتاب سے لطف اٹھانا چاہتے ہیں تو اس جگہ کو آزمائیں۔

فلحال، غاروں کو ایک عمدہ آرام دہ جگہ میں تبدیل کردیا گیا ہے جہاں لوگ آتے ہیں ، پکوڑوں اور چاے پر گپ شپ لگاتے ہیں اور موسیقی سن کر اپنی شامیں خوبصورت بناتے ہیں۔

فیصل مسجد

فیصل مسجد تو ایک مشہور جگہ ہے۔ جدید فن تعمیر کا ایک مظہر فیصل مسجد بھی مارگلہ کے دامن میں واقع ہے۔ یہ ایشیا کی سب سے بڑی مساجد میں سے ایک ہے ، جو ریاست کے جدید ترین ڈھانچے اور ڈیزائن کی ایک مثال ہے۔ اس مسجد میں ایک لاکھ افراد کی گنجائش ہے اور یہ سعودی عرب کے شاہ، شاہ فیصل کا تحفہ تھا۔

جو اسلام آباد آئے اور وہ فیصل مسجد نہ دیکھے، تو وہ اپنے اسلام آباد کے قیام کو ادھورا محسوس کرتا ہے۔ فیصل مسجد کی فضا روح پرور ہے اور یہاں سکون و اطمینان کا گویا ایک بازار آباد ہے۔

مقامی مارکیٹیں

پرتعیش مالز اور شاپنگ سینٹرز کے علاوہ اسلام آباد میں مقامی مارکیٹوں کی ایک اچھی خاصی مقدار موجود ہے۔ اسلام آباد کے کچھ علاقوں جیسے کہ سری نگر ہائی وے میں ہفتہ وار بازار ہوتے ہیں جہاں آپ کو تازہ پھل ، سبزیاں ، کپڑے ، جوتے ، استعمال شدہ اشیاء اور بہت کچھ آسانی سے مل سکتے ہیں، وہ بھی انتہائی سستی قیمت پر۔ سُپر مارکیٹ، جناح سپر مارکیٹ اور کراچی کمپنی اسلام آباد کی مشہور مارکیٹیں ہیں جہاں روز مرہ کی اشیاء آسانی سے خریدی جا سکتی ہیں۔ علاوہ اس کے یہاں آسانی سے آپ کو ایسے ریستوران اور لوکل فوڈ آؤٹ لیٹ مل سکتے ہیں جہاں آپ کھانوں کا معیار اور اُن کی بہتات دیکھ کر حیران رہ جائیں گے۔

مزید خبروں اور اپڈیٹس کے لیے وزٹ کیجئے گرانہ بلاگ۔

Sorry, the comment form is closed at this time.